محفوظات برائے July, 2014

PostHeaderIcon وہ ہلالِ عید کو دیکھ کر بھی اداس ہے

PostHeaderIcon وہ ہلالِ عید کو دیکھ کر بھی اداس ہے

PostHeaderIcon لاہور میں ایک شام ۔۔ اگست 2013

PostHeaderIcon لاہور میں ایک شام ۔۔ اگست 2013

PostHeaderIcon لاہور میں ایک شام ۔۔ اگست 2013

PostHeaderIcon سال تو کم ہیں مقدر میں ترے صدیاں چاہوں

سال تو کم ہیں مقدر میں ترے صدیاں چاہوں
غم کبھی بھی نہ ملیں ایسی میں خوشیاں چاہوں

خار تقدیر بنیں گردِ سفر کی جاناں
تیرے حصے میں فقط پھول اور کلیاں چاہوں

اس سفر میں تجھے رستے ملیں اجلے اجلے
راہ میں جتنی بھی روشن ہیں وہ گلیاں چاہوں

یہ جو خوشیوں کا نگر ہے یونہی آباد رہے
دکھ کی نگری کو میں ہر حال میں ویراں چاہوں

میں نے شاہین کبھی اپنے لئے مانگا کب ہے
ہر دعا تیرے لئے ہی تومیں اے جاناں چاہوں

30 ju

My Facebook
Facebook Pagelike Widget
Aanchal Facebook
Facebook Pagelike Widget
تبصرہ جات
Total Visits: Total Visits